ہمارے پیارے نبی ﷺ کی ولادت بارہ ربیع الاول کو ہوئی

ہمارے پیارے نبی ﷺ کی ولادت ماہ ربیع الاول کی بارہویں تاریخ کو ہوئی اور اس پر ہمارے پاس کثرت سے دلائل موجود ہیں- تاریخ ولادت میں اختلاف بھی ہے لیکن جمہور کے نزدیک بارہ ربیع الاول ہی درست ہے- ذیل میں کچھ کتابوں کے حوالہ جات پیش کیے جاتے ہیں جن میں تاریخ ولادت "بارہ ربیع الاول" کو ہی قرار دیا گیا ہے-

(1) سیرت ابن اسحاق بہ حوالہ الوفا، ص87
(2) سیرت ابن ہشام، ج1، ص107
(3) تاریخ الامم والملوک المعروف بہ تاریخ طبری، ج2، ص125
(4) اعلام النبوۃ، ص192
(5) المستدرک للحاکم، ج2، ص603
(6) عیون الاثر، ج1، ص33
(7) تاریخ ابن خلدون، ج2، ص394
(8) سیرت ابن خلدون، ص81
(9) المورد الروی للقاری، ص96
(10) محمد رسول اللہ، ج1، ص102
(11) حجۃ اللہ علی العالمین، ج1، ص231
(12) ماثبت بالسنۃ، ص31
(13) نور الابصار، ص13
(14) النعمۃ الکبری، ص20
(15) تاریخ اسلامی، ص35
(16) معارج النبوۃ، ج1، ص37
(17) مدارج النبوۃ، ج2، ص18
(18) سیرت حلبیہ، ج1، ص93
(19) المواہب اللدنیۃ، ج1، ص132
(20) بلوغ الامانی، ج2، ص189
(21) تاریخ الخمیس، ص196
(22) البدایہ والنھایہ، ج2، ص260
(23) بیان المیلاد النبوی، ص50
(24) فتح الباری، ج8، ص130
(25) فقیھہ السنۃ، ص60
(26) کتاب اللطائف، ص230
(27) سرور القلوب، ص11
(28) فتاوی رضویہ، ج26، ص411
(29) اسلامی زندگی، ص106
(30) فتاوی نعیمیہ، ص46
(31) تبرکات صدر الافاضل، ص199
(32) رسائل کاظمی، ص2
(33) سیرت رسول عربی، ص43
(34) ذکر الحَسین، ص116
(35) فتاوی مہریہ، ص110
(36) جنتی زیور، ص473
(37) دین مصطفی، ص84
(38) محمد نور، ص56
(39) کتاب فارسی، ص80
(40) انوار شریعت، ص9
(41) الخطیب، ص121
(42) تواریخ حبیب الہ، ص13
(43) جمال رسول، ص11
(44) رسالہ میلاد نمبر، ص24
(45) پیش لفظ تصفیہ مابین سنی و شیعہ
(46) فیصلہ ہفت مسئلہ، ص4

دیوبندیوں، وہابیوں اور شیعوں کی کتب سے ثبوت:

(47) میلاد النبی از اشرف علی تھانوی، ص90
(48) سیرت خاتم الانبیا، ص19، 20
(49) ہادی عالم، ص43
(50) ہفت روزہ، مارچ1977، ص7، 18
(51) قصص النبیین، ج5، ص27
(52) نفحۃ العرب، ص141
(53) خاتون پاکستان رسول نمبر، ص36
(54) رحمت عالم، ص13
(55) ماہنامہ محفل لاہور، مارچ1981، ص65
(56) خاتون پاکستان رسول نمبر، ص839
(57) الشمامۃ العنبریہ، ص8
(58) رسول اکرم ﷺ، ص21، 22
(59) اکرام محمدی، ص270
(60) سیرۃ الرسول، محمد بن عبد الوہاب
(61) سید الکونین، ص60
(62) حیاۃ القلوب، ج2، ص112

کتب عامہ اور تاریخ ولادت:

(63) سید الوری، ج1، ص88
(64) سیرت احمد مجتبی، ج1، ص5، 147، 149
(65) تاریخ مکۃ المکرمہ، ج1، ص211
(66) الامین ﷺ، ص191
(67) محمد سید لولاک، ص118
(68) ہمارے پیغمبر، ص219
(69) ہمارے رسول پاک، ص43
(70) کتاب شان محمد، ص234
(71) محمد رسول اللہ، ص30
(72) شواہد النبوۃ، ص52
(73) معلومات عامہ، ص61
(74) نور کامل، ص36
(75) اسلامی تہذیب و تمدن، ص347
(76) ماہنامہ ترجمان اویس، ص71
(77) ماہنامہ نور الحبیب، اکتوبر1989، ص41
(78) سیرت کوئز، ص18
(79) موضع القرآن، ص33
(80) کیلنڈر از علامہ اکرم رضوی
(81) جان جاناں، ص117
(82) علموا اولادکم محبت رسول اللہ، ص99
(83) خاتم النبیین، ص118
(84) حیات محمد ﷺ، ص26
(85) ماہنامہ جام عرفان، اکتوبر1984
(86) ہفت روزہ الفقیہ، میلاد نمبر1932، ص140
(87) نورانی شمع ترجمہ قرآن مجید، ص13
(88) تاریخ اسلام از محمود الحسن، ص31
(89) تاریخ ملت، ص34
(90) رسالت مآب، ص9
(91) خاتم المرسلین، ص78
(92) تفسیر ضیاء القرآن، ج5، ص665
(93) حاشیہ الروض الانف، ج1، ص107
(94) ضیاے حرم، عید میلاد النبی نمبر، ص184
(95) سیرت سرور عالم، ص93
(96) خطبات الاحمدیہ، ص12
(97) اسلام کی پہلی عید، ص33
(98) فضیلت کی راتیں، ص27
(99) اشرف السیر، ص146
(100) سیرت رسول اکرم، ص7
(101) ماہنامہ التزکیہ، جولائی2002، ص11
(102) جواز الاختفال، ص12
(103) برکات میلاد شریف، ص3
(104) ہمارے حضور، 17
(105) زریں فرمودات، ص401
(106) بھاگوات پران، باب2، شلوک18 بہ حوالہ جان جاناں
(107) الدر المنتظم، ص89
(108) انوار شریعت، ص9
(109) قومی دائجسٹ، خصوصی نمبر1989، ص50
(110) الخطیب، ص121
(111) فقہ السیرۃ، ص60
(112) نشر الطیب از تھانوی، ص22
(113) حیات رسول، ص92
(114) محبوب کے حسن و جمال کا منظر، ص11
(115) عید میلاد النبی کی شرعی حیثیت، ص1

کتب نصاب، انگریزی کتب اور بارہویں تاریخ:

(116) خالد دینیات براے جماعت سوم
(117) دینیات براے جماعت پنجم، ص55
(118) الکتاب العربی براے جماعت ہفتم، ص16
(119) اردو کی ساتویں کتاب، ص17
(120) اردو کی آٹھویں کتاب، ص3
(121) اردو کی آٹھویں کتاب، ص18
(122) اسلامیات نہم و دہم، ص88
(123) مطالعہ پاکستان نہم و دہم، ص119
(124) اسلامیات لازمی بی اے
(125) معیار اسلامیات لازمی بی اے
(126) اردو، دائرہ معارف اسلامیہ، 12، 19
(127) مقالہ سیرت محمد رسول اللہ ﷺ، ص12
(128) انگلش کی آٹھویں، ص1، پنجاب تیکسٹ بک بورڈ
(129) انگلش کی دسویں، ص5
(130) سیرت رسول اللہ، آکسفورڈ یونیورسٹی لندن، ص69
(131) دی لائف آف محمد، ص23
(132) محمد دی فائنل میسنجر، ص50
(133) پروس پیکٹس، 2010، ص162

(ملخصاً: بارہ ربیع الاول ایک جامع تحقیق)

عبد مصطفی

Post a Comment

Leave Your Precious Comment Here

Previous Post Next Post