لَو یا ارینج؟

شادیوں کا جو طریقہ ابھی چل رہا ہے، اُس کی وجہ سے کئی لوگ اس غلط فہمی میں پڑ جاتے ہیں کہ انھوں نے ارینج میرج کی ہے۔ ذرا غور کریں کہ ارینج میرج آج کل ہوتی کہاں ہے؟ 
رشتہ طے ہونے کے فوراً بعد لڑکے اور لڑکی اپنا اپنا موبائل سنبھال لیتے ہیں اور دن رات ایک دوسرے سے گپ شپ جاری رہتی ہے پھر ملاقاتیں اور باتوں پر باتیں.....، یہ تو گھما پھرا کر لَو میرج ہی ہے جسے ارینج کا نام دے دیا گیا ہے۔

ایسا بھی ہوتا ہے کہ شادی کی تاریخ مہینوں بلکہ ایک سال بعد کی رکھی گئی ہے اور اِدھر لڑکا اور لڑکی کے درمیان ملاقاتوں اور باتوں کا سلسلہ جاری ہے جو شادی تک چلا تو چلا ورنہ کچھ گڑبڑ ہونے پر شادی کینسل! 
ایک دوسرے کو دیکھ لیا، باتیں کر لیں، ہاتھوں میں ہاتھ دے کر پارک وغیرہ بھی گھوم لیا، آن لائن چیٹنگ کر لی، آف لائن بھی نہیں چھوڑا تو اب ہمیں کوئی سمجھا دے کہ یہ ارینج میرج کیسے ہوا؟ یہ تو خالص لَو میرج ہے جس میں تھوڑی سی تبدیلی ہے۔

جیسے لَو میرج میں کھلے عام ایک دوسرے کو دیکھ کر پسند کیا جاتا ہے اسی طرح آج کل ارینج میں بھی کیا جاتا ہے، 
ڈیٹنگ چیٹنگ دونوں میں ہوتی ہے، 
ہو سکتا ہے کوئی یہ کہے کہ لَو میرج میں پروپوز کیا جاتا ہے لیکن یہاں ایسا نہیں ہے تو ہم بتا دیں کہ آج کل ارینج میں بھی پروپوز کا سسٹم ہے جسے منگنی کا نام دے دیا گیا ہے۔ دونوں میں فرق یہ ہے کہ وہاں "آئی لو یو" بول کر پروپوز کیا جاتا ہے اور یہاں منگنی میں ایک دوسرے سے بات کرنے کے بعد انگوٹھی پہنا کر پروپوز کیا جاتا ہے۔ وہاں لڑکی یا لڑکے کی طرف سے اقرار اور انکار کی گنجائش ہوتی ہے تو یہاں بھی ایسا ہی ہوتا ہے، اگر چاہو تو اقرار یا انکار۔

یہ لَو میرج جس پر ارینج کا لیبل لگا کر کام چلایا جا رہا ہے، اس میں ایک فائدہ لڑکوں اور لڑکیوں کو یہ ہو جاتا ہے کہ "سیفٹی" پوری ملتی ہے۔ اس میں دونوں محفوظ رہتے ہیں۔ نہ تو فون پر بات کرنے سے اپنا باپ روک سکتا ہے اور نہ ملاقات کرنے سے اس کا باپ!

ہماری اس تحریر سے وہ لوگ اپنی غلط فہمی کا علاج کر سکتے ہیں جنھیں لگتا ہے کہ انھوں نے ارینج میرج کی ہے یا کریں گے۔

عبد مصطفی

Post a Comment

Leave Your Precious Comment Here

Previous Post Next Post