ایک ہمارے بچے ہیں


مامون رشید نے اپنے ایک چھوٹے بچے کو دیکھا جس کے ہاتھ میں حساب کا رجسٹر تھا، تو پوچھا کہ تیرے ہاتھ میں یہ کیا ہے؟ 

بچے نے جواب دیا:

ایک ایسی چیز ہے جس سے ذہانت قوی ہوتی ہے اور غفلت سے بیداری حاصل ہوتی ہے اور وحشت سے انس۔


مامون نے جواب سن کر کہا کہ میں اللہ کا شکر ادا کرتا ہوں جس نے مجھ کو ایسے بچے عطا کیے جو اپنی عمر کے مناسب اپنے جسم کی آنکھ سے زیادہ اپنی عقل کی آنکھ سے دیکھتے ہیں۔


(کتاب الاذکیاء لابن جوزی) 


ایک ہمارے بچے ہیں جو اپنی آنکھ سے زیادہ اپنے موبائل فون کے کیمرا سے دیکھتے ہیں اور زندگی کا ایک حصہ سیلفی لینے میں ہی لگا دیتے ہیں۔

کچھ تو پڑھائی بھی صرف ڈگری کے لیے کرتے ہیں تاکہ رشتہ طے ہوتے وقت کہا جا سکے کہ "لڑکا/لڑکی میٹرک پاس ہے"۔


عبد مصطفی

Post a Comment

Leave Your Precious Comment Here

Previous Post Next Post