تین دعائیں


بنی اسرائیل کے ایک شخص کو حکم ہوا کہ تیری تین دعائیں قبول ہوں گی (لہذا مانگ کیا مانگتا ہے)۔

اس نے اپنی بیوی کے لیے دعا کی کہ وہ سب سے خوبصورت عورت بن جائے۔ اس کی بیوی بنی اسرائیل کی خوبصورت ترین عورت بن گئی مگر خوبصورتی کے غرور میں اپنے شوہر کی نافرمان ہو گئی۔ اس شخص نے تنگ آ کر اپنی دعا کے ذریعے اسے کتیا بنا دیا۔ اس کے بیٹوں نے جب ماں کی یہ حالت دیکھ کر باپ سے سفارش کی تو اس نے دعا کی : الہی اسے پہلے والی شکل و صورت عطا کر دے۔ یہ آخری دعا قبول ہوئی اور وہ پہلے جیسی ہو گئی۔


(تفسیر بغوی، ج2، ص180 بہ حوالہ آدابِ دعا) 


اس میں ہمارے لیے سبق ہے کہ دعا سوچ سمجھ کر کرنی چاہیے۔ دعا کے وقت اچھے لفظوں کا انتخاب کرنا چاہیے۔ فضول چیزوں کا سوال کرنے سے بچنا چاہیے۔


عبد مصطفی

Post a Comment

Leave Your Precious Comment Here

Previous Post Next Post