ہم 4 شادی پر کب تک لکھیں گے؟


ہم اس وقت تک اس ٹاپک پر لکھیں گے جب تک یہ (Common) عام نہ ہو جائے۔


یوں سمجھیں کہ ایک عرصے پہلے جب کہیں کسی لڑکی کے ساتھ کچھ غلط ہوتا تھا تو سن کر بڑا عجیب لگتا تھا اورایک ہنگامہ سا ہو جاتا تھا لوگ ہر طرف باتیں کرتے ہوئے حیران نظر آتے تھے اور جب عورتوں نے کپڑے کم کر دیے، ہم نے نکاح مشکل کر دیا اور ساتھ میں پڑھنے لکھنے جاب کرنے کا (System) نظام عام ہوا تو پھر یہ کیسس (Cases) اتنے بڑھ گئے کہ اب آئے دن نیوز میں ایسے کئی Cases کے بارے میں دکھایا جاتا ہے پر اب سن کر وہ محسوس نہیں ہوتا جو پہلے ہوتا تھا کیونکہ اب یہ بہت زیادہ عام ہو گیا بلکہ رضا مندی کے ساتھ تو اسے غلط بھی نہیں سمجھتے کچھ لوگ۔


اسی طرح 4 شادی والا معاملہ ہے ایک عرصے سے اس پر زیادہ بات نہیں ہوئی زیادہ لکھا نہیں گیا اور عمل بھی نہیں تو اب اچانک یہ لوگوں کو عجیب لگ رہا ہے جبکہ یہ صحیح ہے۔ اب جب ہم اس پر لگاتار کام کریں گے تو کچھ لوگ ضرور سمجھیں گے اور آنے والی نسلوں میں زیادہ تبدیلی آئے گی۔


اگر ایک لڑکی اپنے والد کی 4 بیویاں دیکھے، اپنے بھائی کی ایک سے زیادہ بیویاں دیکھے اور رشتہ داروں میں بھی ایسا ہی نظر آئے تو اسے بھی بڑے ہو کر کسی کی دوسری یا تیسری بیوی بننے میں برا نہیں لگے گا بس ضروری ہے کہ اس ماحول میں بڑا کیا جائے۔


ہم یہ ماحول بنانا چاہتے ہیں اس کے لیے ہر جگہ سے کچھ لوگ مل کر آپس میں ہی آغاز کریں تو کام ہو سکتا ہے۔


اللہ تعالٰی ہمیں اس سنت کو پھر سے زندہ کرنے کی توفیق دے


عبد مصطفی

Post a Comment

Leave Your Precious Comment Here

Previous Post Next Post